کامیابی کی شاہراہ

کامیابی کی شاہراہ

طاہر علی خان

ایک کامیاب اور خوشحال زندگی گزارنا ہر ایککی خواہش ہوتی ہے۔ یقیناً آپ بھی اپنے لیے یا اپنی اولاد کے لیے کامیابی چاہتے ہوں گے.

اور سب کی طرح یقیناً آپ بھی جاننا چاہتے ہیں کہ اپنی خواہشات کے مطابق کامیاب زندگی کا حصول کس طرح ممکن بنائیں۔

میرے ہم پیشہ ساتھی، شاگرد، رشتہ دار اور دوست اکثر مجھ سے پوچھا کرتے ہیں کہ وہ کون سے اصول اور طریقے ہیں جو ناکامی سے بچاتے اور کامیابی دلواتے ہیں۔

میں انہیں جواب دیتا ہوں اگر آپ واقعی کامیابی حاصل کرنا چاہتے ہیں تو چند اصولوں پر عمل کریں، آپ ضرور کامیابی سے ہم کنار ہوں گے۔ یہ اصول کیا ہیں۔ آئیے دیکھتے ہیں۔

1۔ اپنی زندگی پر نظر دوڑائیں اور اپنا احتساب کریں۔ معلوم کرلیں کہ وہ کون سی چیزیں، لوگ اور سرگرمیاں ہیں جن کی وجہ سے ابھی تک آپ ناکام رہے ہیں۔ ان سب سے کنارہ کش ہو جائیں۔ جب کہ جو لوگ اور سرگرمیاں آپ کے لیے کچھ حد تک مفید اور کارآمد ثابت ہوئی ہوں ان کو اپنائے رکھیں۔ ان نقصان دہ اور مفید چیزوں، لوگوں اور سرگرمیوں کی فہرستیں بنالیں اور ساتھ رکھیں۔

2۔ اپنی زندگی کے لیے سوچ سمجھ کر واضح مقاصد متعین کرلیں۔ آپ کیا بننا چاہتے ہیں اور کس طرح اور کتنی مدت میں، یہ متعین کرنا لازمی ہے۔ مقاصد اور ان کے حصول کے لیے مدت اور طریقہ کار کا تعین نہ ہو تو وقت اور وسائل کے ضیاع کے امکانات بڑھ جاتے ہیں۔ مقاصد اونچے ہوں مگر آپ کے پاس دستیاب وسائل، صلاحیت اور وقت کے لحاظ سے حقیقت پسندانہ ہوں۔

ان مقاصد اور ان کے حصول کا دورانیہ اور لائحہ ہائے عمل اپنی ڈائری میں لکھ ڈالیں۔ خود سے وعدہ کریں کہ میں ان مقاصد کے حصول تک چین سے نہیں بیٹھوں گا۔ ہو سکے تو یہ سب کسی چارٹ پر لکھوالیں تاکہ آپ بار بار اس کو دیکھتے رہیں اور آپ کو اپنے وعدے یاد رہیں۔ اپنی روزمرہ سرگرمیوں کو ڈائری میں لکھتے رہیں تاکہ آپ مسلسل اپنا جائزہ لے سکیں کہ مقاصد کی طرف آپ کی پیش رفت جاری ہے یا نہیں۔

آپ مقاصد اور لائحہ عمل کے تعین میں اساتذہ، والدین اور ماہرین سے مشورہ کرسکتے ہیں دوسروں سے مشورہ بے شک لے لیں لیکن اس کے لیے قنوطیت پسند نہیں بلکہ رجائیت پسند افراد سے رجوع کریں۔ یاد۔ رکھیں زندگی آپ کی ہے۔ اسے آپ مکمل طور پر دوسروں کی پسند و ناپسند کی بھینٹ نہ چڑھائیں۔ اپنے فیصلے آپ خود کریں بس جہاں رہنمائی درکار ہو، وہاں ہی دوسروں کی مدد لیں۔

3۔ جب مختلف قلیل مدتی، وسط مدتی اور طویل مدتی مقاصد اور ان کے حصول کے لیے مدت اور راستے آپ نے چن لیے تو اب ان کے حصول کے لیے کام میں لگ جائیں۔ سخت محنت کو شعار بنائیں۔ کام سے عشق کریں۔ خود بہترین انداز میں کام کریں، دوسروں کے سہارے کی تلاش اور انتظار میں نہ رہیں۔ کاہلی، آرام طلبی اور کام کو ملتوی کرنے سے اجتناب کریں۔ اور کسی دوسرے کو بھی اجازت نہ دیں کہ آپ کو اپنے مقاصد سے بدظن اور ان کے حصول سے مایوس کریں۔ ایسے لوگوں کو میں توانائی کی بلاٸیں (Energy vampires) کہتا ہوں۔ ان سے بچ کر رہیں۔

4۔ یاد رکھیں کہ سیوا بن میوا نہیں۔ آج اگر آپ اپنی من پسند اور توجہ ہٹانے والی چیزوں (Distractions) مثلاً زیادہ نیند، دوستوں کی محفلیں، موبائل اور کمپیوٹر کا استعمال، فلمیں دیکھنا اور کھیل کود میں ہمیشہ مگن رہنے وغیرہ، کی قربانی نہیں دیں گے تو آپ یکسوئی کے ساتھ درکار محنت نہیں کر سکیں گے اور کامیابی مشکل ہو جائے گی۔ اس لیے ان چیزوں سے بچیں اور آپ کے مقاصد میں معاون چیزوں، سرگرمیوں اور لوگوں کو زیادہ وقت دینا شروع کریں۔

5۔ قابل اور کامیاب لوگوں کی سوانح اور کہانیاں پڑھیں۔ ان سے کامیابی کے اصول اور طریقے سیکھیں اور ان پر عمل کرنے کی کوشش کریں۔ کوئی رول ماڈل سامنے ہو تو بندے کو محنت کے لیے جوش و جذبہ اور ترغیب میسر رہتے ہیں۔

6۔ جو بھی مقاصد متعین کرلیں ان کے حصول پر مکمل یقین رکھیں۔ اپنے مقاصد اور ان کے حصول کے ذرائع سے دیوانہ وار عشق کریں۔ اس خلوص اور عشق کے بغیر کامیابی مشکل سے ملتی ہے۔

7۔ سب کے لیے محبت، خلوص، قربانی اور سہولت کا ذریعہ بن جائیں۔ کسی کے لیے تکلیف، دکھ اور پریشانی کا ذریعہ با الکل نہ بنیں۔

8۔ ہر ممکن حد تک دوسروں کی مدد اور خدمت کریں۔ چرند و پرند کی ضرورتوں کا بھی خیال رکھیں۔ والدین، بزرگوں، بیواٶں، بچوں، محتاجوں سب کی دعائیں لیا کریں۔ دعائیں ساتھ ہوں تو بڑی بڑی رکاوٹیں ختم ہوجاتی ہیں اور کامیابی کے راستے کھل جاتے ہیں۔

9۔ پابندی سے مطالعہ کو معمول بنالیں۔ آہستہ آہستہ اس کی مقدار بڑھاتے جائیں۔ مطالعے کے نوٹس لیا کریں۔ دوستوں سے مل کر کتاب سوسائٹی بنائیں جس میں کتابوں کے خلاصے اور تبصرے پیش کیا کریں۔

میں اپنے شاگردوں اور سامعین کو اکثر کہتا ہوں کہ کتاب کو معشوق بنالیں۔ یہ دنیا کی واحد معشوق ہے جو اپنے عاشق کو کبھی خوار نہیں ہونے دیتی بلکہ کامیابی، ترقی، عزت اور خوشحالی سے ہمکنار کرواتی ہے۔

10۔ اپنی صحت کا خیال رکھیں۔ ورزش کو معمول بنائیں۔ متوازن خوراک لیں اور مناسب آرام کیا کریں۔ ہرقسم کے نشہ اور لت سے، خواہ وہ منشیات کا ہو یا محفلوں کا یا سوشل میڈیا کے استعمال کا، خود کو بچا کر رکھیں۔ ٹینشن دینے والی چیزوں اور لوگوں سے خود کو دور رکھیں تاکہ آپ کی جسمانی اورذہنی صلاحتیں لایعنی چیزوں میں ضائع نہ ہونے پائیں۔

11۔ آپ نے اپنے مقاصد متعین کر لیے، خود محنت کر رہے ہیں اور دوسروں کی دعائیں بھی آپ کے ساتھ ہیں تو اب اپنے رب سے مانگنے لگ جائیں۔ اللہ کی مدد پر بھروسا رکھیں۔ یاد رکھیں کہ ہمت مرداں مددِ خدا۔ یقین رکھیں وہ محنت کو کبھی رائیگاں نہیں جانے دیتا۔ جو بھی محنت کرتا ہے اسے اس کا صلہ لازمی مل کر رہتا ہے۔ بس آپ یقینی بنائیں کہ آپ کی محنت اور تیاری اس معیار کی ہو جو کامیابی کے لیے ضروری ہے تو کامیابی آپ کو مل کر رہے گی۔

 

Advertisements

Six Success Strategies for Students

Read more of this post

%d bloggers like this: